Urdu Novels **Test**

Back | Home |  
شہرِ چارہ گراںسعدیہ امل کاشف اریبہ! اریبہ! اُٹھو۔۔۔۔ مجھے چائے بنا دو۔ اُسے جھنجوڑا گیا مگر اُس پر کوئی اثر نہیں ہوا۔ اُٹھ جائو۔ اتنی شام ہو گئی ہے۔ کب تک سوتی رہو گی؟ اب کے وہ پوری کی پوری ہل گئی تھی۔ صبا! پلیز سونے دو۔ شام ہو گئی ہے ناں۔ صبح تو نہیں ہوئی۔ وہ کسمسا کر پھر سو گئی تھی۔ اچھا مت اُٹھو، صبح ہی اُٹھنا۔ میں اور امی چائے پی کر خود ہی چلے جائیں گے، بازار۔ صبا نے اس کا کمبل چھوڑ دیا۔ وہ جھٹکے سے اُٹھی تھی، بالوں کو جُوڑے میں لپیٹنے لگی اور اسے دیکھ کر مسکرائی۔ تم تو جا ہی نہیں سکتیں، میرے بغیر۔ اریبہ مسکرائی۔ وہ کیوں؟ اس کی دو وجوہات ہیں۔ نمبر ایک، تم میرے ہاتھ کی بنی چائے کے بغیر چائے پی ہی نہیں سکتیں۔ اور نمبر دو، اگر تم بازار چلی گئیں تو بھی تمہیں اپنے لئے کچھ پسند آنا نہیں، لہٰذا مجھے ہی تمہارے لئے کچھ خریدنا پڑے گا۔ اریبہ کی بات پر وہ بھی مسکرا دی تھی۔ یار! ایک تو مجھے یہ شادیاں جھنجٹ لگتی ہیں۔ ایک شادی کے لئے پندرہ جوڑے، میچنگ میک اپ، جوتے وغیرہ وغیرہ۔ ہر کوئی ایسے تیاری کرتا ہے، جیسے سب لوگ اسی کو دیکھنے آئیں گے۔ صبا نے کہا۔ اپنی شادی پہ کیا کرو گی، موصوفہ! کیسے کرو گی شاپنگ؟ اریبہ بستر سے اُٹھ گئی تھی۔ صبا ایک لمحے کے لئے خاموش ہو گئی۔ پتہ نہیں کیا کروں گی، لیکن میری شادی کی شاپنگ تم ہی کرو گی ناں، اریبہ! صبا نے سوچتے ہوئے کہا۔ ہاں۔۔۔۔ لیکن اس کے بعد کیا کرو گی؟ شادی کے بعد میاں کی، بچوں کی شاپنگ کیسے کرو گی؟ چائے کس کے ہاتھ کی پیو گی؟ کون تمہارے کپڑے ٹیلر سے سلوائے گا؟ کون تمہیں رات کو مالش کرے گا؟ اور کون تمہارے چھوٹے چھوٹے کام کرے گا، کبھی سوچا ہے؟ اریبہ نے صبا کے بالوں کو بکھیرا۔ کیوں سوچوں، میں یہ فضول باتیں؟ میں نے تم سے دور کہیں نہیں جانا۔ ہمیشہ تم ہی کو میرے کام کرنے ہیں۔ صبا نے بال دوبارہ سنوارے۔ اور اگر میں کہیں دُور چلی گئی، تو۔۔۔۔؟ اریبہ نے اُس کی آنکھوں میں جھانکتے ہوئے کہا۔ صبا خاموش ہو گئی

مت کرو، ایسی فضول بے کار باتیں۔ اللہ تعالیٰ نے ہمیں ایک ساتھ پیدا کیا ہے اور ہم ہمیشہ ساتھ رہیں گے، چاہے کچھ بھی ہو جائے، ہمیں کوئی دُور نہیں کر سکتا۔ صبا نے فیصلہ سنا دیا اور اریبہ مسکرا دی۔ وہ دونوں جڑواں تھیں۔ مسز عاصمہ بیگ کے گھر انہوں نے اکٹھے جنم لیا تھا۔ ان سے چھوٹا ایک بھائی تھا، حمزہ۔ والد بہت پہلے وفات پا چکے تھے۔ عاصمہ بیگ کے گلشن میں یہی تین پھول تھے، جو اپنی مہکار سے ان کی زندگی کو تروتازہ رکھے ہوئے تھے۔ اریبہ اور صبا کی محبت مثالی تھی۔ دونوں ایک دوسرے کے بغیر رہ ہی نہیں سکتی تھیں۔ اکٹھے کھانا، ایک سے کپڑے پہننا، ہر جگہ ساتھ ساتھ رہنا۔ ان کے نہ صرف خدوخال بلکہ ہر چیز یکساں تھی۔ بہت کم لوگ انہیں پہچان پاتے تھے۔ ورنہ اسکول، کالج، محلے ہر جگہ لوگوں کو یہ پہچاننے میں دُشواری ہوتی کہ کون صبا ہے اور کون اریبہ۔۔۔۔۔ ان دونوں کی دنیا ایک دوسرے تک محدود تھی۔ دونوں ایک دوسرے کی زندگی کے لئے لازم و ملزوم تھیں۔ جیسے کہ ایک ڈالی پہ لگے دو، ایک سی شکلوں والے پھول، جن کی مہک بھی یکساں اور زندگی بھی مشترکہ۔ دونوں کا کچھ بھی تو الگ نہ تھا، سوائے سانسوں کے۔ >>> بتائو نا، یار! کون کون جا رہا ہے، مہندی کے فنکشن پر؟ تاکہ اس حساب سے پروگرام بن سکے۔ عدنان چیخ رہا تھا۔ گروپ کے سبھی لوگ اپنی اپنی باتوں میں مصروف تھے۔ یہ ایم اے سوشیالوجی کی کلاس کے ہونہار شاگردوں کا گروپ تھا جن میں صبا، اریبہ، عثمان، عدنان، سجل، باسط اور فاخر تھے۔ یہ سب ہی آپس میں اچھے دوست تھے اور سب ہی پڑھائی میں ذہین بھی۔ کلاس میں چلنے والی ہر بحث میں یہ ساتوں آگے آگے تھے۔ ہم دونوں تو تیار ہیں۔ سارے فنکشن ہی اٹینڈ کرنے ہیں، ورنہ فاخرہ ناراض ہو جائے گی۔ اریبہ نے فاخرہ کو مسکراتی آنکھوں کے ساتھ دیکھ کے کہا۔ جواب میں فاخرہ بھی مسکرا دی۔ یار! میری وارڈن ہٹلر ٹائپ کی ہے۔ کہتی ہے، رات نو بجے سے پہلے پہلے آ جایا کرو۔ اگر اُس سے چھٹی مل جائے نا، تو مزہ آ جائے۔ میری طرف سے ابھی کوئی پروگرام فائنل نہیں۔ سجل نے کہا۔ یار سجل! تمہیں آنا ہے۔ کچھ بھی ہو جائے۔ فاخرہ نے کہا۔ اُس کی بہن کی شادی تھی اور وہ چاہتی تھی کہ اس کے سبھی دوست آئیں۔ عثمان اور میں دونوں آ جائیں گے، لیکن یہ باسط صاحب نیا پروگرام بنا کے بیٹھے ہیں۔ عدنان نے کہا۔ کیا کروں یار! میرا بڑا بھائی چار سال بعد لندن سے آ رہا ہے، ایسے کیسے میں ان کو ریسو نہ کروں؟ کسی کی پرابلم سمجھتے بھی ہیں۔ امی ناراض ہو جائیں گی۔ باسط نے پریشان سی صورت بنا کے کہا۔ اتفاق سے بھائی کی فلائٹ کا وقت بھی وہی ہے، جو مہندی کے فنکشن کا ہے۔ کہہ تو رہا ہوں، بارات اور ولیمہ اٹینڈ کر لوں گا، لیکن مہندی کے لئے میری معذرت قبول کر لو۔ باسط نے فاخرہ کے سامنے ہاتھ جوڑ دیئے۔

of 1 
Go
 
 


Beauty Magazine | Cooking Recipies | Hamd-o-Naat | Poetry Collection | Online Urdu Novels | Mehndi Design | Indian Fashion Magazine | Weddings | Forum Nook Jhook | Women Magazine | Currency Converter | Tips (totkay) | Health | Blog| Pakistan Zindabad